سری لنکا

سیالکوٹ:مذہبی انتہا پسندوں کے ہاتھوں مقامی فیکڑی کا سری لنکن مینجر قتل

مشتعل ہجوم نے توہین مذہب کا مبینہ الزام عائد کرتے ہوئے سری لنکن شہری پر تشدد کیا اور پھر لاش کو آگ لگا دی

سیالکوٹ:مذہبی انتہا پسندوں  نے توہین مذہب کے  مبینہ الزام میں سری لنکن شہری کو بے دردی سے قتل کر کے اس کی لاش کو آگ لگا دی۔ سری لنکن شہری پریانتھا کمارا وزیر آباد روڈ پر واقع ایک نجی فیکٹری میں بطور ایکسپورٹ مینجر کام کرتا تھا۔

Sri Lankan factory manager tortured to death in Sialkot over alleged blasphemy - The Current

تفصیلات کے مطابق، پاکستان کے شہر سیالکوٹ میں وزیر آباد روڈ پر ایک نجی فیکٹری کے ایکسپورٹ مینیجر پریانتھا کمارا پر فیکٹری کے کارکنوں نے حملہ کر دیا۔ پنجاب کے انسپکٹر جنرل آف پولیس راؤ سردار علی خان نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے علاقائی پولیس حکام کو فوری طور پر جائے وقوعہ پر پہنچنے کی ہدایت کی۔ آئی جی پنجاب نے کہا کہ سیالکوٹ کے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر عمر سعید ملک جائے وقوعہ پر موجود تھے اور واقعے کی مکمل تحقیقات کی جائیں گی۔ دریں اثناء سیالکوٹ پولیس کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ابتدائی تحقیقات مکمل ہونے کے بعد اس افسوسناک واقعے کی تفصیلات میڈیا سے شیئر کی جائیں گی۔ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے بھی آئی جی  کو واقعہ کی مکمل تحقیقات کرکے رپورٹ جلد پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔ وزیراعلیٰ نے اس واقعہ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسے ’’انتہائی افسوسناک‘‘ قرار دیا اور حکم دیا کہ واقعہ کی ہر پہلو سے تحقیقات ہونی چاہئے اور رپورٹ پیش کی جائے۔ وزیر اعلی نے کہا کہ قانون کو اپنے ہاتھ میں لینے والوں کے خلاف کارروائی سخت کارروائی کی جائے،” وزیر اعلیٰ نے کہا۔ اس ہولناک واقعے کی ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ سینکڑوں لوگ جائے وقوعہ پر جمع ہیں۔ اس واقعہ نے سوشل میڈیا پر شہریوں میں کافی غصہ پیدا کیا ہے، بہت سے لوگوں نے تشدد کے واقعات میں اضافے کے لیے انتہا پسند گروپوں کو خوش کرنے کی حکومتی پالیسیوں کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

صوبائی حکومت کے ترجمان حسن خاور نے کہا، "فیکٹری کے کارکنوں نے مینیجر کو تشدد کا نشانہ بنایا۔” "اب تک مجموعی طور پر 50 افراد کی شناخت اور گرفتار کیا جا چکا ہے۔” خان نے قتل کی مذمت کی اور کہا کہ وہ ذاتی طور پر تحقیقات کی نگرانی کر رہے ہیں اور کہا کہ قصورواروں کو سزا دی جائے گی۔ انہوں نے ٹویٹر پر ایک پیغام میں کہا، "سیالکوٹ میں ایک فیکٹری پر ہولناک چوکس حملہ اور سری لنکن مینیجر کو زندہ جلانا پاکستان کے لیے شرم کا دن ہے۔”

مزید دکھائیے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button