اقوام متحدہسیکورٹی کونسل

عالمی طاقتیں افغانستان میں ایک جامع حکومت کے قیام پر متفق ہیں،جنرل سیکرٹری اقوام محتدہ

دہشتگردی سے پاک،خواتین اور لڑکیوں کے حقوق کااحترام،تمام طبقات پر مشتمل جامع حکومت کا افغانستان چاہیتے ہیں

نیویارک:اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے پانچ مستقل اراکین نے بدھ کو افغانستان کے بارے میں مشترکہ موقف اپناتے ہوئے کہا ہے کہ طاقت ور ممالک طالبان پر دباو ڈالیں گے کہ وہ تمام گروہوں کو حکومت میں شامل کریں۔ چین اور روس نے پچھلے مہینے طالبان کی فتح کو امریکہ کی شکست قرار دیا ہے اور اْنکے ساتھ مل کر کام کو بھی تیار ہیں، لیکن بین الااقوامی برداری میں شامل  کوئی بھی ملک طالبان کی حکومت کو تسلیم کرنے کو تیار نہیں  ۔

A boy selling Taliban flags looks for customers while walking along a road in Herat

 اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے سالانہ اجلاس کے بعد سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس نے صحافیوں کو بتایا کہ سلامتی کونسل میں شامل تمام ممالک ایک پرامن اور مستحکم افغانستان چاہتے ہیں جہاں انسانی امداد بغیر مسائل اور امتیاز کے تقسیم کی جا سکے۔

انہوں نے کہا کہ وہ ایک ایسا افغانستان چاہتے ہیں جہاں خواتین اور لڑکیوں کے حقوق کا احترام کیا جائے ، جہاں دہشت گردی کو پناہ نہ مل سکے اور جس میں ایک جامع حکومت ہو جو آبادی کے تمام طبقات کی نمائندگی کرے۔

 

مزید دکھائیے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button

اپنا ایڈ بلاکر تو بند کر دیں

آواز ، آزادی صحافت کی تحریک کا نام ہے جو حکومتوں کی مالی مدد کے بغیر خالص عوامی مفادات کی خاطر معیاری صحافتیاقدار کی ترویج کرتا ہے اپنے پسندیدہ صحافیوں کی مدد کے لئے آواز کو اپنے ایڈ بلوکر سے ہٹا دیں