اقوام متحدہانسانی حقوقبھارتبین الاقوامیپاکستانتارکین وطنحقوقکشمیرہیومن رائٹس

یورپی یونین مقبوضہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی پامالیوں کو رکوائے، علی رضا سید

اسلام ٹائمز۔ چیئرمین کشمیر کونسل ای یو علی رضا سید نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی گھمبیر صورتحال پر اراکین یورپی پارلیمنٹ کا تازہ مراسلہ اہمیت کا حامل ہے۔ واضح رہے کہ سولہ اراکین یورپی پارلیمنٹ نے جمعہ کے روز اپنے ایک مشترکہ خط میں مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین صورتحال پر سخت تشویش کا اظہار کیا ہے اور یورپی یونین کے اعلیٰ حکام سے کہا ہے کہ وہ وہاں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کو روکنے کے لیے فوری اقدامات کریں۔یورپی کمیشن کی سربراہ ارسلا واندرلین اور یورپی یونین کے وزیر خارجہ اور یورپی کمیشن کے نائب سربراہ جوزپ بوریل کو ان اراکین پارلیمنٹ کی طرف سے لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ ہم آپ کی توجہ جموں و کشیر میں انسانی حقوق کی خراب صورتحال کی طرف دلانا چاہتے ہیں جہاں لوگوں کے مصائب کا تذکرہ انسانی حقوق کی عالمی تنظیم ہیومن رائٹس واچ کی 2021ء کی رپورٹ اور اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے کمشنر کی 2018ء اور 2019ء کی رپورٹوں میں کیا گیا ہے۔

خط میں یورپی یونین کے حکام سے کہاگیا ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی گھمبیر صورتحال پر ان اراکین کی تشویش کو بھارتی حکومت تک پہنچائیں اور وہاں انسانی حقوق کی بہتری کے لیے فوری ایکشن لیں۔ ان اراکین نے یورپی یونین سے یہ بھی اپیل کی کہ وہ خطے میں امن و استحکام کے لیے بھارت، پاکستان اور کشمیری عوام کے نمائندوں کے مابین مذاکرات کے انتظامات کرے اور اپنا اثرورسوخ استعمال کرتے ہوئے دونوں ملکوں پاکستان اور بھارت کو مسئلہ کشمیر کے پرامن حل کے لیے آمادہ کریں تاکہ یہ مسئلہ اقوام متحدہ کی قراردادوں اور کشمیریوں کی خواہشات کے مطابق حل کیا جا سکے۔ علی رضا سید نے اپنے بیان میں کہاکہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خراب صورتحال پر یورپی پارلیمنٹ کے سولہ اراکین کا خط بہت اہمیت کا حامل ہے کیونکہ اس سے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کو دنیا کے سامنے لانے میں مدد ملے گی۔

انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی صورتحال کئی دہائیوں سے خراب ہے اور اب پانچ اگست 2019ء سے جب سے بھارت نے جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کر دی ہے، اس خطے کی صورتحال مزید خراب ہو گئی ہے۔ چیئرمین کشمیر کونسل ای یو نے یورپی یونین سے مطالبہ کیا کہ وہ اپنے ذرائع اور اثر و رسوخ کو استعمال کر کے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کو رکوائے اور اقوام متحدہ کی قراردادوں اور کشمیریوں کی خواہشات کے مطابق، مسئلہ کشمیر کے منصفانہ حل کے لیے اپنا کردار ادا کرے۔

مزید دکھائیے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button

اپنا ایڈ بلاکر تو بند کر دیں

آواز ، آزادی صحافت کی تحریک کا نام ہے جو حکومتوں کی مالی مدد کے بغیر خالص عوامی مفادات کی خاطر معیاری صحافتیاقدار کی ترویج کرتا ہے اپنے پسندیدہ صحافیوں کی مدد کے لئے آواز کو اپنے ایڈ بلوکر سے ہٹا دیں