پاکستانلاہور

نورمقدم قتل کیس، مرکزی ملزم کے گرفتار والدین کی درخواست ضمانت پر سماعت

اسلام آباد: سول کورٹ میں نورمقدم قتل کیس کے مرکزی ملزم ظاہر جعفر کے گرفتار والدین کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی ۔ تفتیشی افسر کی غیر موجودگی میں سیشن جج محمد سہیل نے مقتولہ کے والد شوکت مقدم کو آج ہی اپنا وکیل نامزد کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت چار اگست تک اگست تک ملتوی کردی۔

سیشن جج اسلام آباد محمد سہیل نے نور مقدم قتل کیس میں گرفتار مرکزی ملزم کے والد ذاکر جعفر اور والد عصت آدمجی کی درخواست ضمانت پر سماعت کی ۔ مقتولہ نور مقدم کے والد شوکت مقدم عدالت میں پیش ہوئے جبکہ ملزمان کی پیروی اسد جمال ایڈووکیٹ نے کی۔

سرکاری وکیل ساجد چیمہ نے عدالتی استفسار پربتایا کہ کیس کے تفتیشی آفیسر ملزم سمیت ویڈیو فورینزک کے لئے لاہور گئے ہیں۔ کیس کی فائل بھی انہی کے پاس ہے جبکہ ملزمان کے وکیل نے اسد جمال نے موقف اپنایا کہ پولیس نےبغیرکسی جائز وجہ کے خاتون عصمت آدمجی کو جیل میں ڈال دیا ہے۔انہیں رہا کیا جائے۔انہوں نے عدالت سے درخواست ضمانت پر کل ہی سماعت کی استدعا کی۔

مقدمے کے مدعی شوکت علی مقدم نے وکیل کرنے کے لئے عدالت سے پیر تک مہلت کی استدعا کی۔جج نےمدعی کو آج ہی وکیل کا وکالت نامہ جمع کرانے کی ہدایت کرتے ہوئےسماعت چار اگست تک ملتوی کردی۔

مزید دکھائیے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button

اپنا ایڈ بلاکر تو بند کر دیں

آواز ، آزادی صحافت کی تحریک کا نام ہے جو حکومتوں کی مالی مدد کے بغیر خالص عوامی مفادات کی خاطر معیاری صحافتیاقدار کی ترویج کرتا ہے اپنے پسندیدہ صحافیوں کی مدد کے لئے آواز کو اپنے ایڈ بلوکر سے ہٹا دیں