برطانیہبھارتبین الاقوامیپاکستانتارکین وطندفاعکشمیرلاہور

فردوس عاشق اعوان نے مریم نواز کو کیسا کھلا چیلنج دے دیا؟

معاون خصوصی وزیراعلیٰ پنجاب ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ آزاد جموں و کشمیر کے الیکشن میں انتشار سے جڑا، فساد سے ہم آہنگ، قومی سلامتی کو پارہ پارہ کرنے اور قوم کو گروپوں میں بانٹنے والا سیاسی چورن بیچنے والوں کا بیانیہ ناکام ہوگیا ہے، جبکہ عوام، قومی سلامتی اور دفاع سے جڑا بیانیہ جیت گیا ہے، وزیراعظم عمران خان نے کشمیریوں کے حق خودارادیت کے بیانیہ کو اجاگر کر کے دہشت گردی سے جڑے مودی بیانیہ کے چہرے کو بے نقاب کیاہے، جبکہ دوسری جانب ظل سبحانی، جعلی راجکماری اور شاہی خاندان کے درباری و حواریوں نے کشمیر کی وادیوں میں نفرت کے بیج بوئے ہیں۔

ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ کل کے نتائج نے ثابت کردیا کہ عمران خان کشمیری عوام کے دلوں میں بستے ہیں اور وہ انہیں اپنا مسیحا تسلیم کرتے ہیں۔ ووٹ کو عزت دو کا دعویٰ کرنے والوں نے کشمیر کے پہاڑوں پرنوٹ کو عزت دو کا نعرہ لگایا اور کشمیریوں کے انکارپردھاندلی کا رونا شروع کردیا۔ وزیر اعظم آزاد کشمیرن لیگ کا تھا اوراس کی قیادت میں الیکشن کمیشن نے جو قوانین بنائے جس پر ہمارے تحفظات تھے۔ کیونکہ دو حلقوں سے موجودہ وزیراعظم الیکشن لڑرہا تھا اور تمام سرکاری وسائل کو انتخابی مہم میں استعمال کررہا تھا۔ وزیراعظم آزاد جموں کشمیر جب سرکاری گاڑیوں سے خود نمائندہ کے طورپرمہم چلا رہا ہو تو دھاندلی کیسے ہوگئی۔ کشمیرمیں ہمارا کوئی اہلکار تعینات نہیں اورپریزائیڈنگ آفیسر سے لے کر پولنگ کا تمام سٹاف آزاد کشمیر کی موجودہ حکومت کے پے رول پہ تھا تو وفاقی حکومت الیکشن کیسے چوری کرسکتی ہے۔

معاون خصوصی نے کہاکہ کشمیریوں نے پاکستان کے ساتھ کھڑے ہونے کا فیصلہ کرکے مودی کے رشتہ داروں کو کشمیر سے باہر پھینک دیا ہے۔ جعلی راجکماری اپنے پاؤں کلہاڑی پر ماررہی ہے، کیونکہ کشمیریوں نے اُن کی جڑیں کاٹ دی ہیں۔ شاہی خاندان کا ذاتی ملازم عطا تارڑ نوٹ لے کرپھرتا رہا جب گوجرانوالہ میں اپنا سکہ جمانے کی کوشش کی تو قانون نے اسے گرفت میں لے لیا۔ گوجرانوالہ سے ن لیگ کا سنپولیہ بھارت کو مدعو کرنے کی بات کررہا تھا جو ان کی اصل کہانی و سوچ کی عکاسی کرتا ہے کہ یہ ذاتی مفاد کیلئے کسی بھی حد تک جا سکتے ہیں۔

ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نے کہاکہ ن لیگ کا مفرور لیڈرجسے اشتہاری کا اعزاز حاصل ہے لندن میں بیٹھ کر دشمنوں سے ملاقاتیں کرکے الطاف حسین ثانی بننے کی کوشش کررہاہے۔ کشمیری باشعور اورسمجھ دار قوم ہیں اور وہ جانتے ہیں کہ وفاق کی حکومت ان کی ترجمان ہے ان کیلئے اپنی کاز مقدم ہے سیاسی مداری ان کیلئے اہم نہیں۔ کہیں کسی ایک جگہ پردھاندلی کا ثبوت ہے توسامنے لائیں۔ الیکشن کمیشن ان کا لگایا ہوا ہے، دھاندلی کا کھرا وزیراعظم آزاد کشمیر تک جائے گا۔ مریم تین میں نہ تیرہ میں ہیں۔ ان کی نہ گھرمیں کوئی سنتا ہے اورنہ جماعت میں۔ انہوں نے کہاکہ جعلی راجکماری سیالکوٹ الیکشن چوری کرنے گئی تھی، کارنرمیٹنگ کرکے واپس آ گئی۔

مزید دکھائیے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button

اپنا ایڈ بلاکر تو بند کر دیں

آواز ، آزادی صحافت کی تحریک کا نام ہے جو حکومتوں کی مالی مدد کے بغیر خالص عوامی مفادات کی خاطر معیاری صحافتیاقدار کی ترویج کرتا ہے اپنے پسندیدہ صحافیوں کی مدد کے لئے آواز کو اپنے ایڈ بلوکر سے ہٹا دیں