اولمپکسپاکستانجاپانجرمنیخواتین

مومجی نیشیایا گولڈ میڈل حاصل کرنے والی اولمپکس تاریخ کی دوسری کم عمر ترین ایتھلیٹ بن گئی

ہاں


7 آراء

جاپان کی مومجی نیشیایا اولمپکس کی تاریخ کی گولڈ میڈل حاصل کرنے والی دوسری کم عمر ترین ایتھلیٹ بن گئی ہے جس نے 13 سال 330 دن کی عمر میں خواتین کے پہلے اسکیٹ بورڈنگ اسٹریٹ مقابلے میں کامیابی حاصل کرکے یہ اعزاز اپنے نام کیا۔

اریکے اربن اسپورٹس پارک میں جاپانی کھلاڑی نے شروع سے ہی دیگر پر سبقت حاصل کی۔

یہ ایونٹ سیڑھیوں، ریلنگز اور ریمپس پر ہوا تھا جو کسی پارک سے مشابہت رکھتا تھا اور جاپانی کھلاڑی نے 15.26 اسکور کرکے ساتھ طلائی تمغہ اپنے نام کیا۔

برازیل کی 1 سالہ راسیا لیال نے 14.64 اسکور کے ساتھ سلور میڈل اپنے نام کیا جو کہ کوئی بھی اولمپک میڈل حاصل کرنے والی کم عمر ترین ایتھیٹ بھی بن گئیں۔

جاپان کی ایک اور اسکیٹر 16 سالہ فیونا ناکایاما نے کانسی کا تمغہ جیتنے میں کامیابی حاصل کی۔

اس وقت گولڈ میڈل حاصل کرنے والی کم عمر ترین کھلاڑی مارجوری گیسٹرنگ ہیں جنہوں نے 19336 کے برلن اولمپکس میں 13 سال 268 دن کی عمر میں ویمنز 3 میٹر اسپرنگ بورڈ ڈائیونگ میں گولڈ میڈل جیتا تھا۔

اسکیٹ بورڈنگ کو پہلی بار ٹوکیو اولمپکس میں شامل کیا گیا ہے اور خواتین کے ساتھ مردوں کے ایونٹ میں بھی جاپانی ایتھلیٹس ہی چھائے رہے۔

مومجی نیشیایا نے میڈل جیتنے کے بعد کہا ‘مجھے نہیں لگتا تھا کہ میں جیت سکتی ہوں، مگر میرے ارگرد موجود ہر فرد مجھے سراہ رہا تھا اور میں اس کامیابی پر بہت خوش ہوں’۔

حیران کن طور پر ورلڈ اسٹریٹ بورڈنگ چیمپئن جاپان کی اوری نیشی مورا نے اس ایونٹ میں 8 ویں پوزیشن حاصل کی، جس کی وجہ کئی بار گرنا تھا جس سے خون بہنے کے ساتھ مختلف انجریز کا بھی سامنا ہوا۔

دوسری جانب فلپائن کی 22 سالہ اسکیٹر مارگیلین ڈیڈل نے کہا کہ وہ یہ دیکھ کر خوشی محسوس کررہی ہیں کہ 2 13 سالہ اسکیٹرز نے گولڈ اور سلور میڈل جیتے۔

انہوں نے کہا ‘جیتنے والے تمام اسکیٹرز بہت کم عمر ہیں، کیا آپ ایسا سوچ سکتے تھے، یہ تاریخ رقم ہوئی ہے اور میں اس کی شاہد ہوں’۔

ان کا کہنا تھا ‘بچے یا اسکیٹنگ سیکھنے کے خواہشمند ہر فرد کو میں بتانا چاہتی ہوں کہ وہ بس اسکیٹ کریں اور اس سے لطف اندوز ہوں، خود کو محفوظ رکھنے کے لیے حفاظتی گیئر کا استعمال کریں تو کچھ بھی نا ممکن نہیں’۔

منبع: ڈان نیوز

مزید دکھائیے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button

اپنا ایڈ بلاکر تو بند کر دیں

آواز ، آزادی صحافت کی تحریک کا نام ہے جو حکومتوں کی مالی مدد کے بغیر خالص عوامی مفادات کی خاطر معیاری صحافتیاقدار کی ترویج کرتا ہے اپنے پسندیدہ صحافیوں کی مدد کے لئے آواز کو اپنے ایڈ بلوکر سے ہٹا دیں