افغانستانپاک آرمیپاکستانپشاور

افغان فوج کی قیادت نے پاکستان سے پناہ اور مدد کی اپیل کردی

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق افغان نیشنل آرمی کے لوکل کمانڈر کی جانب سے چترال کے اروندو سیکٹر میں پاک آرمی سے رابطہ کیا گیا جس میں پناہ اور محفوظ راستے کی درخواست کی گئی ہے، آئی ایس پی آر کے مطابق افغان نیشنل آرمی کے 46 سپاہیوں اور 5 افسران کی جانب سے پاک فوج سے محفوظ راستے کی درخواست کی گئی ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق افغان سپاہی اپنی چوکی پر مزید قبضہ جاری رکھنے کے قابل نہیں رہے تھے، یہ افغان فوجی گزشتہ رات گئے اروندو چترال سیکٹر پہنچے تھے، 46 افغان فوجیوں اور پانچ افسران کو پاکستان میں پناہ اور محفوظ راستہ دے دیا گیا، ان تمام کو خوراک اور ضروری طبی امداد فراہم کی گئی ہے، ضروری کارروائی کے بعد ان افسران اور فوجیوں کو افغان حکام کے حوالے کر دیا جائے گا۔

مذیدپڑھیں: پاکستانی مشوروں کا خیر مقدم کرتے ہیں لیکن ڈکٹیشن لینا ہماری روایات میں شامل نہیں: طالبان

آئی ایس پی آر کے مطابق یکم جولائی کو بھی 35 افغان فوجیوں نے بارڈر پر پاک فوج سے پناہ طلب کی تھی، ان کو بھی محفوظ پناہ کے بعد طریقہ کار کے تحت افغان حکام کے حوالے کیا گیا تھا۔

آراء:
92

مزید دکھائیے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button