آسٹریلیاامریکہبرطانیہبھارتٹینسجرمنیحقوقخواتینسعودی عربقازقستانکالم و مضامینکورونا وائرس

جبیر ومبلڈن کوارٹرز پہنچنے والی پہلی عرب خاتون بن گئیں

– کالم و مضامین –

فوٹو: خیلج ٹائمز

ومبلڈن ٹینس چیمپئن شپ کے مینز اور ویمنز سنگلز ایونٹس کوارٹر فائنل مرخلے میں داخل ہو گئے ہیں۔ خواتین سنگلز کے کوارٹر فائنلز منگل کے روز کھیلے جائیں گے جبکہ مینز سنگلز کے کوارٹر فائنل مقابلے بدھ کو ہوں گے۔ اس بار ومبلڈن ایونٹ کرونا وبا کی وجہ سے ایک سال کی غیر حاضری کے بعد منعقد ہو رہا ہے اس بار گراس کورٹ پر پھسلن کی وجہ سے کئی کھلاڑی زخمی ہوگئے اور انہیں ٹورنامنٹ سے ریٹائر ہونا پڑا۔ ومبلڈن چیمپئن اور عالمی نمبر ایک نواک جوکووچ اور سب سے زیادہ ومبلڈن اعزازات جیتنے والے راجر فیڈرر بھی اس کا شکار ہوئے لیکن وہ کسی مشکل میں پھنسنے سے محفوظ رہے۔ راجر فیڈرر پہلے راؤنڈ میں اپنے فرانسیسی حریف ایڈریان مانارینو سے ایک سیٹ ہار گئے تھے اور دوسرے سیٹ میں بھی پیچھے تھے کہ ایڈریانو سینٹر کورٹ میں اسی پھسلن کا شکارہوا اور ان فٹ ہونے کی وجہ سے اسے ٹورنامنٹ سے باہر ہونا پڑ گیا۔ اس طرح راجر فیڈرر کو اس پھسلن کے نتیجے میں نئی زندگی ملی اور وہ اب کامیابی سے پیشقدمی جاری رکھے ہوئے ہیں۔

امریکی ٹینس لیجنڈ سرینا ولیمز کو بھی گراس کورٹ کو یہ پھسلن لے ڈوبی۔ وہ آسٹریلیا کی مارگریٹ کورٹ کا 24 گرینڈ سلام اعزازات برابر کرنے کا عزم لے کر لندن آئی تھی لیکن سات مرتبہ ومبلنڈن سنگلز جیتنے والی سرینا کو پہلے راؤنڈ کے پہلے سیٹ میں الیگزینڈرا ساسنووچ کے خلاف مقابلے ریٹائر ہونے پر مجبورہونا پڑا جب دونوں کا مقابلہ 3-3 گیمز سے برابر تھا۔ سرینا کو ممکنہ فیورٹ قرار دیاگیا تھا جب وہ کورٹ سے ر،صت ہورہی تھی تو اپنے جذبات پر قابو نہ رکھ سکی اور روی پڑی۔ اسٹیڈیم میں موجود تماشائیوں تالیاں بجا کر زبردست انداز میں لیجنڈ سرینا کورخصت کیا۔اینڈی مرے نے بھی پہلے راؤنڈ کے دوران بھسل گئے تھے لیکن وہ سنبھل گئے حالانکہ وہ سرجری کے بعد ابھی واپس آئے ہیں اور انہیں وائلڈ کارڈ انٹری ملی تھی۔ آسٹریلیا کے نک کرگیوس بھی تیسرے راؤنڈ میں پھلسن کا شکار ہوئے اورریٹائر ہو گئے۔ نواک جوکووچ اور کوکو گاؤف نے بھی کورٹ پر پھسلن کے خلاف اپنی شکایات ریکارڈ کروائی تھیں۔کورٹ فور میں ایک بال گرل پھسل کر شدید زخمی ہوگئی جسے فوری طور پر ایمبولینس کے ذریعے اسپتال لے جایاگیا۔ سباستین کورڈ‘ ڈان ایونز‘ ڈینس شاپوالوف سمیت مزید کئی کھلاڑی بھی کورٹ میں کھیل کے دوران پھسل کر گرے لیکن اس صورت حال کے باوجود ومبلڈن حکام کا کہنا ہے کہ انہیں اس میں کوئی شبہ نہیں کہ گراس کورٹ بالکل محفوظ ہیں۔ ان کورٹس کو گرینڈ سلام سپروائزرز نے چیک کیا ہے۔

اس بار ٹورنامنٹ میں نئی خواتین کھلاڑیوں نے شاندار کاکردگی کا مظاہرہ کیا اور کوارٹر فائنل میں رسائی کرنے والی بیشتر کھلاڑی پہلی بار ومبلڈن میں اس مرحلے تک پہنچی ہیں۔

اونس جبیر نے وینس ولیمز کی ومبلڈن مہم کو سفاکانہ انداز میں ختم کیا  کھیل |  اوقات

تیونس کی 26 سالہ انس جابر نے ومبلڈن ٹینس چیمپئن شپ کے پری کوارٹر فائنل میں سابق فرنچ اوپن چیمپئن ایگا سواٹیک کو ایک سیٹ سے خسارے میں جانے کے بعد شاندار کم بیک کیا اور ہرا کر ناصرف اپ سیٹ کردیا بلکہ وہ ومبلڈن ٹینس چیمپئن شپ کی تاریخ میں کوارٹر فائنل میں رسائی کرنے والی پہلی عرب خاتون بن گئی۔ پولینڈ کی سیڈ 7 ایگا سواٹیک نے سیڈ 21 انس جابر کے خلاف پہلا سیٹ سخت مقابلے کے بعد 5-7 سے جیت کر سبقت حاصل کر لی تھی۔ پہلے سیٹ میں دونوں کھلاڑیوں نے جم کر ایک دوسرے کا مقابلہ کیا۔

انس جابر نے ایگا کے خلاف پہلے سیٹ میں بھی شاندار کھیل پیش کرتے ہوئے 1-3 سے سبقت حاصل کر لی تھی لیکن بعد میں ایگا نے اچھا کھیل پیش کرتے ہوئے انس کی پیش قدمی روک کر میچ میں واپس آئی۔ تیونسی کھلاڑی نے کم بیک کیا اور دو گیم جبت کر مقابلہ 3-5 کر دیا۔ اس مرحلے پر پولش اسٹار ایگا نے اچھے گراؤنڈ اسٹروکس اور بیک ہینڈ شاٹس کھیلے اور تیزی کے ساتھ پوائنٹس حاصل کرتے ہوئے پہلا سیٹ 7-5 سے جیتنے میں کامیاب ہوئی۔

انس جابر نے اگلے دو سیٹ میں انتہائی جارحانہ اور غیر معمولی کارکردگی دکھائی اورایگا سواٹیک کو سنبھلنے کی بالکل موقع نہیں دیا۔ انس کی بالادستی کا اس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ ایگا ان دو سیٹ میں ایک ایک گیم سکی اور انس جابر نے ایگا کو دوسرے سیٹ میں 1-6 اور تیسرے سیٹ میں 1-6 سے زیر کر کے آل انگلینڈ کلب کورٹ میں کوارٹر فائنل مرحلے میں پہنچنے والی پہلی عرب خاتون کا اعزاز حاصل کر لیا۔ انہوں نے گرینڈ سلام اعزازات جیتے والی تین معروف کھلاڑیوں وینس ولیمز‘ گاربین موگوروزا اور ایگا کو شکست دی۔

کوارٹر فائنل میں انس جابر کا مقابلہ بیلاروس کی سیڈ 2 اریانا سبالینکا سے ہو گا جس نے قازقستان کی سیڈ 18 ایلینا ربیاکینا کو 6-3‘4-6‘6-3 سے ہرا کر کوارٹر فائنل میں جگہ بنائی۔ اریانا سبالینکا بھی پہلی بار کسی گرینڈ سلام ایونٹ کے کوارٹر فائنل میں پہنچی ہے۔

انس جابر نے گزشتہ ماہ برمنگھم کلاسک ٹرافی جیتی تھی اور وہ ڈبلیوٹی اے ٹائٹل جیتنے والی پہلی عرب خاتون کھلاڑی بن گئی تھیں۔ انس نے ومبلڈن میں کوارٹر فائنل تک کے سفر میں پہلے راؤنڈ میں ربیکا پیئرسن کو زیر کیا تھا۔ انس دوسرے راؤنڈ میں پانچ مرتبہ ومبلڈن ویمنز سنگلز جیتنے والی امریکی لیجنڈ وینس ولیمز کو ہرا کر شہ سرخیوں کی زینت بن گئی تھی۔ اگلے مرحلے میں انس نے ایک اور معروف کھلاڑی گاربین موگوروزا کو پہلا سیٹ ہارنے کے باوجود تین سیٹ میں شکست دے کر اپنے خطرناک عزائم کا اظہار کیا تھا۔ سابق عالمی نمبر ایک گاربین نے 2016 میں فرنچ اور 2017 میں ومبلڈن ٹائٹل جیتا تھا۔ موگوروزا کے خلاف میں انس جابر سے مضبوط اعصاب اور زبردست حوصلے کا مظاہرہ کیا کیونکہ میچ کے دوران انہیں پیٹ میں تیزابیت کی وجہ سے متلی ہو گئی تھی۔ لیکن اس نے ہمت سے کام لیا اور میچ جیتا۔ وہ 2020 میں آسٹریلین اوپن کوارٹر فائنل کھیل چکی ہے۔

عالمی نمبر ایک ایشلے بارٹی بھی پہلی بار ومبلڈن کے کوارٹرفائنل میں رسائی میں کامیاب ہوگئی۔ بارٹی نے  راؤنڈ آف 16 میں جمہوریہ سلواکیہ کی باربورا کراجسیکووا کو بآسانی دو سیٹ میں 7-5‘6-3  سے ہرایا اور اس کے ساتھ ہی باربورا کی مئی اٹالین اوپن سے مسلسل 15 فتوحات کا سلسلہ منقطع ہو گیا۔ آسٹریلین کھلاڑی ایشلے بارٹی نے 10 سال قبل جونیئر ومیلڈن ٹائٹل  جیتا تھا لیکن وہ ومبلڈن ویمنز سنگلز میں چوتھے راؤنڈ سے آگے نہیں بڑھ پائی تھی۔ ایشلے نے 2019  میں فرنچ اوپن ٹرافی اپنے نام کی تھی۔ عالمی نمبر ایک ایشلے بارٹی بھی پہلی بار ومبلڈن کے کوارٹرفائنل میں رسائی میں کامیاب ہوگئی۔ بارٹی نے  راؤنڈ آف 16 میں جمہوریہ سلواکیہ کی باربورا کراجسیکووا کو بآسانی دو سیٹ میں 7-5‘6-3  سے ہرایا اور اس کے ساتھ ہی باربورا کی مئی اٹالین اوپن سے مسلسل 15 فتوحات کا سلسلہ منقطع ہو گیا۔ آسٹریلین کھلاڑی ایشلے بارٹی نے 10 سال قبل جونیئر ومیلڈن ٹائٹل  جیتا تھا لیکن وہ ومبلڈن ویمنز سنگلز میں چوتھے راؤنڈ سے آگے نہیں بڑھ پائی تھی۔ ایشلے نے 2019  میں فرنچ اوپن ٹرافی اپنے نام کی تھی۔

ومبلڈن: عالمی نمبر ایک بارٹی نے پہلی بار کوارٹر فائنل میں جگہ بنالی ، نو سالہ انتظار ختم ہوا - ٹیچیلایو ڈاٹ انڈیا

کوارٹر فائنل میں کیرولینا پلسکووا کا مقابلہ سوئس کھلاڑی وکٹوریہ گولوبچ سے ہو گا جو پہلیبار گرینڈ سلام کوارٹر فائنل میں پہنچی ہے۔ اس سے قبل وہ تیسرے راؤنڈ سے آگے نہیں بڑھ سکی تھی۔    کیرولینا پلسکوار نے پری کوارٹر فائنل میں سامسونووا کو 6-2,6-2 سے زیر کیا تھا۔ پلسکووا بھی پہلی بار ومبلڈن کوارٹر فائنل میں پہنچی ہے۔  وکٹوریہ نے امریکہ کی میڈیسن کیز کو 7-6,6-3 سے  زیر کر کے اس مرحلے میں رسائی کی۔   جرمنی کی اینجلک کیربر کا کوارٹر فائنل میچ   جمہوریہ چیک کی کیرولینا موچووا سے ہو گا۔ اینجلک کیربر نے امریکہ کی کوکو گاؤف کو 6-4,6-4 سے شکست دی جبکہ موچووا نے راؤنڈ آف 16 میں پاؤلا بیڈوسا کو ہرایا۔ اینجلک کیربر نے اپنے کیریئرمیں تین گرینڈ سلام آسٹریلین اوپن‘ یوایس اوپن اور ومبلڈن کا اعزازایک ایک بار اپنے ڈرائنگ روم کی زینت بنایا ہے۔ سابق عالمی نمبرایک ومبلڈن ویمنز ایونٹ میں اس وقت باقی رہ جانے والی کھلاڑیوں میں سب سے تجربہ کار ہیں اور اگر کوئی اپ سیٹ نہ ہوا تو  انہیں  اور  ایشلے بارٹی  کو ٹائٹل فیورٹ کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔

مینز سنگلز کے کوارٹر فائنلز میں کیرن خاچانوف کا مقابلہ ڈینس شاپوالوفسے ہوگا جبکہ دفاعی چیمپئن نواک جوکووچ کے مد مقابل ہنگری کے مارٹن فوکسوکس ہو گے۔ فوکسوکس پہلی مرتبہ کسی بھی گرینڈ سلام ایونٹ کے کوارٹر فائنل میں پہنچے ہیں۔ وہ ومبلڈن میں راؤنڈ ٹو سے آگے نہیں بڑھ سکے تھے۔ اس وقت فوکسوکس کی عالمی رینکنگ 374 ہے اور وہ عالمی نمبر ایک سے مقابلہ کریں گے۔ جوکووچ ٹورنامنٹ جیت کر راجرفیڈرراوررافیل نڈال کے 20,20 اعزازات کے ہم پلہ ہونا چاہتے ہیں۔ ان کے اعزازات کی تعداد 19 ہے۔

سوئس لیجنڈ راجرفیڈرر نے پری کوارٹر فائنل میں اپنے اطالوی حریف لورنزو سونگو کو تین سیٹ کے مقابلے 7-5<6-4,6-2 سے شکست دے کر کوارٹر فائنل میں رسائی کر لی۔ فیڈررکا ہدف ٹائٹل اپنے نام کر کے گرینڈ سلام اعزازات کی تعداد 21 کرنا اور پہلے نمبر پر آنا ہے۔ وہ فٹنس مسائل کی وجہ سے کافی عرصے کورٹ سے دور رہے تھے لیکن ومبلڈن جو ان کا فیورٹ ایونٹ ہے میں ان کی کارکردگی اب تک بہترین رہی




جملہ حقوق بحق مصنف محفوظ ہیں .
آواز جرات اظہار اور آزادی رائے پر یقین رکھتا ہے، مگر اس کے لئے آواز کا کسی بھی نظریے یا بیانئے سے متفق ہونا ضروری نہیں. اگر آپ کو مصنف کی کسی بات سے اختلاف ہے تو اس کا اظہار ان سے ذاتی طور پر کریں. اگر پھر بھی بات نہ بنے تو ہمارے صفحات آپ کے خیالات کے اظہار کے لئے حاضر ہیں. آپ نیچے کمنٹس سیکشن میں یا ہمارے بلاگ سیکشن میں کبھی بھی اپنے الفاظ سمیت تشریف لا سکتے ہیں.

مزید دکھائیے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button