انصافپاکستانحقوقخواتینصحتکراچی

الیکشن مہم کا آغاز ،تانگا پارٹیوں اور خلائی مخلوق کا وجود ختم ہو چکا ہے،چوہدری یٰسین- روزنامہ اوصاف

چڑھوئی(ویب ڈیسک)مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف کے سیکڑوں سرگرم کارکناں نے اپوزیشن لیڈر چوھدری محمد یسین کی موجودگی میں پاکستان پیپلز پارٹی میں شمولیت اختیار کر لی۔جبکہ چوھدری محمدیسین کا راجپوت برادری،ملک برادری،اور مغل برادری کی جانب سے گائوں خانکہ کٹیہڑہ میں عظیم الشان جلسہ، مختلف مقامات پر استقبال ، پھولوں کی پتیاں نچھاور کرکے سیکڑوں موٹر سائیکل اور کاروں کی شاندار ریلی کے ساتھ ، جیئے بھٹو، شہید رانی زندہ آباد، وزیر اعظم چوھدری محمدیسین، کوٹلی کی شان چڑھوئی کی

اسلامی معاشرے کے قیام کے لیے خواتین اپنا کردار ادا کریں،ڈاکٹر خالد

مان یسین کے نعروں کی گونج میں جلسہ گاہ لایا گیا، جلسے کا آغاز باقاعدہ تلاوت قرآن پاک سے کیا گیا جس کی سعادت حافظ محمداسحاق گورسی نے حاصل اور نعت رسول مقبول ۖشہزادانجم نے پیش کی۔ سٹیج سیکریٹری کیفرائض چوھدری ریاست علی نے انجام دئیے چوھدری یسین نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے سوا کوئی بھی دوسری پارٹی نہیں جو غریب مساکین، اور نوجوانوں کی خدمت کر سکے، پاکستان پیپلز پارٹی کی جڑیں عوام میں ہیں، تانگا پارٹیوں اور خلائی مخلوق کا وجود ختم ہو چکا ہے،آنے والا دور پاکستان
پیپلز پارٹی کا ثابت ہوگا، عوامی طاقت سے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو وزیر اعظم کی کرسی پر بٹھائیں گے، بلاول بھٹو زرداری واحد لیڈر ہیں جن میں ملک چلانے کی صلاحیت موجود ہے،بلاول بھٹو زرداری پاکستان کو ترقی و خوشحالی کی طرف گامزن کر سکتے ہیں،پاکستان کی عوام سلیکٹیڈ اور نااہل حکمرانوں سے نجات چاہتی ہے ، سلیکٹڈ حکمرانوں نے ملک کا بیڑا غرق کر دیا ہے، عوام دو وقت کی روٹی کھانے کے لئے پریشان ہے، بھوک بدحالی اور مہنگائی کی وجہ سے عوام خودکشی کر نے پر مجبور ہے،انہوں نے نئے شامل ہونے والوں کاشکریہ ادا کیاجنھوں نے مجھ سے محبت عقیدت کااظہار کیا ھیکوشش کروں گا ان کیاعتماد پر پورا اتروں۔میں نے الیکشن مہم کا آغاز کردیا ھے۔اور یہ تقریر میری اس کی پہلی کڑی ھے۔1996
کالیکشن اٹھائی ھزار سے جیتا تھا 2011 کا الیکشن بتیس ھزار کی سبقت سے جیتا تھا۔2016 کیالیکشن میں وفاقی چھتڑی کے مکمل زور لگانے کے باوجود جیتا تھا۔یہ سب میرے والدین، بزرگوں، اور آپ لوگوں کے تعاون سے ممکن ھوا تھا۔آمدہ الیکشن بھی انشااللہ بھاری اکثریت سے جیتوں گا۔مسلم کانفرس کے پچاس سالہ برسراقتدار دورانیہ پر پیپلز پارٹی کے بارہ سال بھاری ھیں۔پیپلزپارٹی نے کارکن نوازی کیساتھ ساتھ میرٹ کی بالادستی کو بھی بحال رکھا تھا۔حلقہ چڑھوئی کی تمام ذیلی اور اندرونی لنکس کومیں نے جوڑا تھا۔جب میں نے الیکشن لڑا اس وقت صرف ایک مین روڈ تھی۔میں نے اقتدار میں آنے بعد مین سڑک کی کشادگی،ری کنڈیشنگ کروائی مگر بعد کے سیاستدانوں کو توفیق ہی حاصل نہیں ھوئی۔میرے حلقہ
انیس کالج ہیں جبکہ اس میں سے سترہ کاقیام میرے دور میں ھوا تھا۔خانکہ کٹیہڑی میں ہائی سکول اور انٹرکالج میری وجہ سے ملے تھے۔خانکہ کٹیہڑہ میں لنک روڈ کیجال بچھا دئیہیں۔جو سب ایک دوسرے سے جڑے ہیں۔ھم نے آزادکشمیر میں تین میڈیکل کالج دئے جواپنی مثال آپ ھیں۔آزادکشمیر میں لوگوں ایک یونیوسٹی تھی جو جنرل حیات نے قائم تھی۔مگر پیپلزپارٹی چار یونیورسٹیاں قائم کی ھیں۔ھم نے اپنے دور اقتدار میں لوگوں کیحقوق کی جنگ لڑی ھے۔اور مزید لڑنے کیلئے تیارہیں۔۔مقامی مقررین میں سے ڈاکٹر نعیم مدنی راجہ نے کہا کہ میں نے 1991 میں ایف ایس سی کاامتحان پاس کیاملازمت کیلئے دھکے کھائے مگر حلقہ کی کھڑپینچ سیاست نے مجھیملک چھوڑنے پر مجبور کیا۔اور آج بیرون ملک دھکے کھارہا ہوں
۔چوھدری یسین کا پہلے ہی دن سے عاشق ہوں اور رہوں گا۔برادری ازم کے بت تراشنے والے منہ کیبل گرگئے ہیں اور سچے سچے ہیرے بچے ہیں جو چوھدری یسین کی صورت میں ہیں۔انہوں چوھدری یسین سے لنگ روڈ کا مطالبہ کیا جس کی محلے کو اشد ضرورت ھے۔یہ روڈ 1985 سے تاحال تعطل ھے۔انہوں نے چوھدری یسین کو خانکہ کٹیہڑہ آنے پر مبارک باد دی اور شکریہ ادا کیا۔اس کیبعد ادریس یوسف نیاپنے خطاب میں جمہوریت کی افادیت اور جمہوری نظام سے متعلق جامع پہرائیمیں کہا۔اور چوھدری یسین کو حقیقی جمہوریت کاعلمبردار قرار دیا۔انہوں نے کہاکہ ھمارے تمام بنیادی مسائل،پانی کی فراھمی،سڑکوں کی فراھمی ،تعلیمی اداروں کاقیام،بجلی کی فراھمی سب چوھدری یسین کی مرہون منت ہیں اور وہ مرد بحران ہیں بقیہ
مسائل کو بھی وہی حل کریں گئے۔انہوں چوھدری یسین کی آمد کاشکریہ ادا کیا۔اس کیبعد اسرار احمد بٹ نے چوھدری یسین کے تعمیراتی کاموں کا مختصر خاکہ کھینچا حالیہ کروناوائرس جیسی موذی مرض سے صحت یابی عوامی دعاں کی وجہ سے ھوئی۔اور آج قائد ھمارے درمیان ہیں۔محمدخوشحال اور سیکریٹری محمدیوسف نے چوھدری محمدیسین کاشکریہ اداکیا اور ان سے عوامی مسائل جلد حل کرنے کی توقع رکھی۔حلقہ کے انتہائی متحرک اور چوھدری یسین کے دست راست راجہ امتیاز عزیز نے کہاکہ چوھدری یسین کوہمالیہ کانام ھے اس سے ٹکرانے والا پاش پاش ھوجائے گا۔انہوں نے کہا کہ چوھدری یسین وعدوں کی ایفا اور وفا کانام ھے۔تعمیروترقی کانام ھے۔سوشل میڈیا پر پروپیگنڈہ عام چیز ھے۔جس پر آئے روز وکٹیں گرائی
جاتی ہیں مگر ھم نے عملی دکھائی ہیں سوشل میڈیا اسے حقیقی صورت میں دکھائے۔ میرے قائد کی 18 اکتوبر 2020 کی ریلی نے حریفوں کو سونے نہیں دیااور آج کی کارنر مٹینگ نے مزید انہیں رونے پیٹنے پر مجبور کردیا ھے۔مسلم لیگ آپس میں لڑائی جھگڑے اور نااتفاقی کا ڈیرہ ھے۔وہ ھمیں کیا شکست دیں گئیمیرے قائد کی پھوک ان پر بھاری ھے۔میرپور کیکنونشن میں راجہ فاروق حیدرخان کیکپڑے کارکنوں نے پھاڑ دیئے ہیں اور لوگ دست وگریباں ھونے تک تیار ھوگئے تھے۔یونین کونسل پنجن چڑھوئی سے انشااللہ پانچ ہزار ووٹوں کی لیڈ دوں گا۔بڑے دعوینہیں اپنا پولنگ اسٹیشن کلین سویپ کرکے قائد سے وفا کارشتہ پورا کروں گا وہ مجھ پر قرض ھے جو میں نے چکانا ھے۔حمزہ بناس نے اپنی تقریر میں کہا کہ چوھدری یسین
ایک نڈر بیباک سیاست دان ھے۔عوامی حقوق کامحافظ ھے۔جمہوریت کاعلمبردار ھے۔بردار ازم کا خاتمہ بھی انہوں نے کیاتھا۔تعمیروترقی کاحقیقی کا ہیرو ھے۔ انشااللہ آئندہ کا وزیراعظم ھے۔حاجی محمد مقصود نے اپنے خاندان کی نمائندگی کرتے چوھدری یسین کاشکریہ اداکیا اور میاں محمدبخش کارمزی شعر پڑھ کر اپناخطاب مکمل کیا۔اس کیبعد سابق چیئرمین کے ڈی اے چوھدری ریاض ایڈوکیٹ نے کہا کہ چوھدری محمد یسین کی صحت یابی کے لئے تمام لوگوں کی دعائیں تھی۔انہوں نیچوھدری یسین کی آمد کاشکریہ ادا کیا۔اور نئے شامل ہونے والے لوگوں کابھی شکریہ ادا کیا۔انہوں نے اپنے خطاب میں کہاکہ پیپلزپارٹی شہیدو کی جماعت ھے۔نڈر لوگوں پر مشتمل ھے۔آپ لوگوں سے زیادتی نہیں ھونے دوں گا یہ میرا وعدہ ھے۔ھم نے
الیکشن مہم کا آغاز کردیا ھے۔اور یہ اس کی پہلی کڑی ھے۔جس میں آپ لوگوں کا ساتھ شامل ھے۔صدر حلقہ چڑھوئی ڈاکٹر شوکت محمود نے کہاکہ حلقہ چڑھوئی میں تمام تعمیراتی کام چوھدری یسین کی مرہون منت ہیں۔یہ سڑکیں، کالجز، ھسپتال وغیرہ وغیرہ مسلم کانفرنس ،مسلم لیگ اور تحریک انصاف نے نعروں کیعلاوہ کچھ نہیں دیا ھے۔انہوں نے نئے شامل ہونے والوں کا شکریہ اداکیا۔ پیپلز پارٹی کیقافلہ میں شامل ہونے والیمحمد رزاق,شہزاد احمد,رہاض احمد,ناہید احمد,وحید احمد,محمد ایوب,مدثر ایوب,مبشر ایوب,ساجد احمد,آصف ریاض,محمد شاہپال,محمد الطاف,محمد وقاص,شاہزیب احمد, خوشحال احمد,عاقب مغل, محمد شفیع, محمد طارق, محمد قیصر,محمد رفیق,محمد ولید مالک,حمید مالک,نوید مالک,محمد ندیم مغل,محمد
عظیم مغل, حاجی گل حسین,عقیل مغل,روحیل مغل,منظور مغل,حسین مغل,محمد آصف راجہ,محمد رضوان راجہ,ہارون طارق,عمر طارق,اسد بٹ,خالد بٹ,ذیشان بٹ,معروف احمد شیخ,راجہ لیاقت,راجہ مقبول خان اور فاروق شیخ نے اپنی برادری کے سیکڑوں ساتھیوں سمیت اپوزیشن لیڈرچوھدری محمد یسین کی موجودگی میں پاکستان پیپلز پارٹی میں شمولیت اختیار کرلی۔میٹنگ کے شرکا سیسیاسی عمائدین اور پی ایس ایفPSF ،پی وائی او PYO اور مقامی مقررین نے خطاب کیا۔جلسے کیلئے ایک بجے کا وقت مقرر تھامگر اپوزیشن لیڈر چوک صاحباں میں حلقہ کیلوگوں کیمسائل کی میٹنگ اور راستے میں تیماداری اور فاتحہ خوانی کیوجہ سے تاخیر سے پہنچے۔وہ اپنے لاں لشکر سمیت براستہ ناڑاکوٹ کیری سے خانکہ کٹیہڑہ پہنچے راستہ میں
چوھدری طارق کی زوجہ صغیر قریشی کی ساس اورچوھدری آصف کی زوجہ کی فاتحہ پڑھی۔اور پھر جلسہ گاہ پہنچے۔ ڈاکٹر شوکت علی چوھدری،چوھدری ریاض ایڈوکیٹ، زیادہ متحرک نظر آئے۔جلسے کیاختتام کیبعدوہ نگہال ازرم جٹ کی والدہ محترمہ اور چوھدری خالد نگہالوں کی پھوپھی کی تعزیت کی اور اس کے بعد کوٹلی روانہ ھوگئے۔

مزید دکھائیے

متعلقہ خبریں

Back to top button

اپنا ایڈ بلاکر تو بند کر دیں

آواز ، آزادی صحافت کی تحریک کا نام ہے جو حکومتوں کی مالی مدد کے بغیر خالص عوامی مفادات کی خاطر معیاری صحافتیاقدار کی ترویج کرتا ہے اپنے پسندیدہ صحافیوں کی مدد کے لئے آواز کو اپنے ایڈ بلوکر سے ہٹا دیں