Breaking News
’وائٹ ہاؤس میں صدر ٹرمپ کے قریبی ساتھیوں میں تکرار‘

’وائٹ ہاؤس میں صدر ٹرمپ کے قریبی ساتھیوں میں تکرار‘

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے روس سے خفیہ معلومات کا تبادلہ کرنے کے لیے خود کو حاصل اختیار کا دفاع کیا ہے۔

امریکی صدر نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ انھوں نے یہ معلومات دہشت گردی کے حقائق اور ایئر لائن کی حفاظت کے لیے فراہم کیں اور وہ چاہتے تھے کہ روس دولتِ اسلامیہ کے خلاف مزید کارروائی کرے۔

خیال رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ گذشتہ ہفتے اوول میں موجود اپنے دفتر میں روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف سے ملے تھے۔

میں جانتا ہوں کہ میں زیرِ تفتیش نہیں ہوں: ڈونلڈ ٹرمپ

اس سے قبل امریکی میڈیا نے یہ دعویٰ کیا تھا کہ یہ معلومات ایک ایسے اتحادی کی جانب سے آئی تھیں جس نے امریکہ کو انھیں روس تک پہنچانے کی اجازت نہیں دی تھی۔

منگل کو اپنی ٹوئٹ میں امریکی صدر نے لکھا کہ ‘بحیثیت صدر میں نے روس سے شیئر کرنا چاہا ( وائٹ ہاؤس میں طے پانے والی ملاقات میں) جسے کرنے کا مجھے مکمل حق حاصل ہے، دہشت گردی اور فضائی پروازوں کی حفاظت سے متعلق شواہد کے بارے میں۔’

اس کی وجہ انسانیت سے ہمدردی تھی، ساتھ ہی میں یہ چاہتا تھا روس دولتِ اسلامیہ اور دہشتگردی کے خلاف جنگ میں مزید کام کرے۔’

About Faiza Abbas

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Enable Google Transliteration.(To type in English, press Ctrl+g)