Breaking News
اوباما کا شام میں دہشت گردوں کو اسلحے کی فراہمی کا حکم

اوباما کا شام میں دہشت گردوں کو اسلحے کی فراہمی کا حکم

 واشنگٹن(آواز نیوز)اوباما کی طرف سے یہ فیصلہ واشنگٹن کے اس دعوے کے ایک دن بعد لیا گیا ہے کہ جسمیں کہا گیا تھا کہ شامی حکومت نے غیر ملکی حمایت یافتہ دہشت گردوں کے خلاف کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا ہے۔ دمشق نے واشنگٹن کے اس الزام کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا ہے۔
اوباما کے قومی سلامتی کے نائب مشیر بین روڈس نے کہا کہ صدر نے واضح کیا تھا کہ کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال سے زمینی حقائق میں الٹ پھیر ہو جائے گا اور ایسا ہو گیا ہے۔
رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ سی آئی اے کے ذریعےشام میں دہشت گردوں کو رائفلوں، کندھے سے فائر کیے جانے والے راکٹوں،  گرینیڈ اور اینٹی ٹینک میزائل جیسے سنگین ہتھیاروں کی ترسیل کی جائے گی۔
شام میں عسکریت پسندوں کو اسلحہ فراہم کرنے کے امریکی فیصلے کی روس نے شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ واشنگٹن کے اس فیصلے سے علاقے میں تشدد میں مزید اضافہ ہوگا۔
امریکہ کا یہ فیصلہ ایسے وقت میں آیا ہے کہ جب شام میں غیر ملکی حمایت یافتہ عسکریت پسندوں کو سنگین نقصان اٹھانا پڑ رہا ہے اور چند روز قبل انہوں نے اسٹریٹجک شہر قصیر کا کنٹرول کھو دیا تھا۔ در ایں اثناء شامی سکیورٹی فورسز نے شمالی شہر حلب کا مکمل کنٹرول دوبارہ حاصل کرنے کے لئے ایک وسیع آپریشن شروع کر دیا ہے۔
مبصرین کا کہنا ہے کہ شام کے تنازعے میں امریکہ کی دخالت میں اضافے کے لیے اوباما پر بھاری دباؤ تھا جس کے تحت یہ فیصلہ لیا گیا ہے۔ منگل کے روز سابق امریکی صدر بل کلنٹن نے کہا تھا کہ شام کے تنازعہ میں مداخلت کرنے میں واشنگٹن کی ناکامی، ایک بری غلطی ہوگی۔

About Imran Saqib

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Enable Google Transliteration.(To type in English, press Ctrl+g)